عالمی رپورٹ نے خطے کی تشویشناک صورتحال سے آگاہ کردیا۔

بھارت اور پاکستان بڑے پیمانے پر امن خراب ہونے کا نقصان اٹھا سکتے ہیں اور نہ ہی کوئی یہ فریق نقصان برداشت کرسکتا ہے۔ ایک امریکی انٹلیجنس رپورٹ نے متنبہ کیا ہے کہ غلط ایشوز کے امکانات کی کھوج کرتے ہوئے وہ جنوبی ایشیاء میں امن خراب کرنے کا باعث بن سکتے ہیں۔

واشنگٹن میں جاری کی جانے والی امریکی حکومت کی نیشنل انٹلیجنس کونسل کی ہر چار سال بعد تیار کی جانے والی عالمی رجحانات کی ایک رپورٹ میں اس جائزے کو شامل کیا گیا ہے۔ اس رپورٹ میں ، فوری اور دور دراز مستقبل دونوں پر توجہ دی گئی ہے اور یہ پالیسی اگلے پانچ سے 20 سالوں میں دنیا کی تشکیل کے امکانات کی پیش گوئی کرنے میں مدد کے لئے تیار کی گی ہے۔

بھارت اور پاکستان خطے میں امن برقرار رکھنے کے لیے اپنا اپنا کردار ادا کریں۔ دونوں ممالک کی ترقی اور خوشحالی کا دارومدار امن کے لیے کی جانے والی کوششوں پر منحصر ہے۔ مسئلہ کشمیر اور باقی تمام مسائل کا حل پرامن ڈائیلاگ کے ذریعے ہی ممکن ہے۔ بھارت اس امر پر زور دے کہ وہ کسی بھی قسم کے نقصان کا متحمل نہیں ہو سکتا ہے۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *