کراچی ریسٹوراں ایسوسی ایشن نے سندھ حکومت سے مدد کا مطالبہ کر دیا۔

کراچی: آل کراچی ریسٹورینٹ ایسوسی ایشن کے رہنماؤں نے سندھ حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ انکے کاروبار کو دوبارہ کھولنے کی اجازت دیں۔

 

 

Advertisement

ایسوسی ایشن کے عہدیداروں نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی حکومت سے ریسٹورنٹس میں انڈور اور آؤٹ ڈور ڈائننگ کی اجازت دینے کی درخواست کی۔

 

 

انہوں نے لاک ڈاؤن کے دوران انتظامیہ اور پولیس کے “نامناسب” سلوک کی شکایت کی ، اور مطالبہ کیا کہ ان کے مہر بند کھانے کو ڈی سیل کردیا جائے اور زیرحراست ملازمین کو رہا کیا جائے۔

 

 

انہوں نے ریستوران کی بندش اور اپنے ملازمین کی حراست کے خلاف احتجاج کرنے کا اعلان کیا۔

 

اس کے علاوہ ، سندھ کے وزیر بلدیات سید ناصر حسین شاہ نے یقین دہانی کرائی کہ شادی ہالز کو 6 جون سے دوبارہ کھولنے کی اجازت دی جائے گی۔

 

 

آل سٹی تاجر ​​اتحاد کے صدر حمد پونو والا کی سربراہی میں تاجروں کے وفد نے بھی وزیر سے ملاقات کی اور صوبائی حکومت سے اپیل کی کہ وہ کاروباری اوقات کو شام 6 بجے سے شام 8 بجے تک بڑھا دیں۔

 

 
حماد نے مزید مطالبہ کیا کہ سیل شدہ شاپنگ مالز، دکانیں اور میرج ہال بھی ڈی سیل کردیئے جائیں۔ تاجر برادری اب اپنے نقصان کو پورا کرنے کے لیے حکومتی تعاون کی طلبگار ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *