مصر نے فلسطین کی تعمیر نو کے لیے انجینیئرز اور تعمیراتی سازوسامان کا قافلہ بھیج دیا۔

قائرہ: مصر نے اسرائیل اور فلسطین کے حالیہ تنازعے کے بعد فلسطینی محاصرے میں تعمیر نو شروع کرنے کے لئے انجینئرز اور تعمیراتی سازوسامان کا قافلہ بھیج دیا ہے۔ یہ بات مصر کے سرکاری ٹیلی ویژن نے شائع کی۔

 

 

Advertisement

ٹیلی ویژن کی تصاویر میں بتایا گیا کہ غزہ کی پٹی میں داخل ہونے کے لئے درجنوں بلڈوزر ، کرینیں اور مصری پرچم پرواز کر رہے اور ٹرک سرحد کے ساتھ کھڑے ہیں۔

 

 

فلسطینیوں نے قافلہ کے استقبال کے لئے غزہ کی طرف رافح عبور کی سڑک کا اہتمام کیا کیونکہ وہ چھوٹے ساحلی محاصرہ میں چلے گۓ تھے۔

 

 

فلسطین کے ایک سرحدی اہلکار نے بتایا کہ 50 گاڑیاں عبور ہوگئیں ہیں۔

 

ہم اپنی تمام رقم ، سازوسامان ، اور دوبارہ تعمیر نو میں فلسطینیوں کے ساتھ شامل ہونے کے لئے جو کچھ رکھتے تھے اسے لے کر بھاگے ہیں۔ مصر کے ٹرک ڈرائیور محمود اسماعیل نے غزہ میں رائٹرز کو بتایا کہ “ہر مسلمان اور ہر مصری تعمیر نو میں حصہ لینا چاہتے ہیں۔”

 

 

غزہ کے فلسطینی اسلام پسند، حکمران اسرائیل اور حماس کے درمیان گیارہ دن تک جاری رہنے والے تنازعہ کا آغاز 10 مئی کو ہوا۔

 

غزہ میں اسرائیلی سینکڑوں فضائی واقعات میں 250 سے زائد فلسطینی جان سے چلے گئے تھے۔ اسرائیل میں غزہ کے عسکریت پسندوں کے ذریعے فائر کیے گئے راکٹوں میں 13 افراد شہید ہوگئے۔

 

 

دونوں ممالک کے مابین افسوسناک معاملات کے خاتمے میں مصر نے اہم کردار ادا کیا ہے اور کہا ہے کہ وہ غزہ میں تباہ حال علاقوں کی تعمیر نو کے لئے 500 ملین ڈالر مختص کرے گا۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *