صوبہ سندھ کے مختلف علاقوں میں مٹی کے طوفان اور موسلادھار بارشوں نے تباہی مچادی۔

کراچی: نوشہرہ فیروز اور پنو اکیل میں بارش سے متعلقہ واقعات میں کم از کم چار افراد جان سے چلے گئے ، یہ خبر پولیس افسران کے حوالے سے ملی۔

 

 

Advertisement

پولیس حکام نے بتایا کہ طوفانی آندھی کے ساتھ بارش کے باعث نوشہرو فیروز ، دریا خان مری اور کنڈیارو میں مکان کی دیواریں گر گئیں جس کے نتیجے میں 3 افراد جان سے گئے اور 8 زخمی ہوگئے۔ پولیس حکام نے بتایا۔

 

 

بارش کے بعد علاقے میں 10 گھنٹے تک بجلی کی بندش جاری رہی اور اس خبر کے نشر ہونے تک اسے بحال نہیں کیا جاسکا۔

 

پنو اکیل میں بارش کے دوران مکان کی چھت گر کر ایک خاتون جان سے گئی اور تین بچے زخمی ہوگئے۔

 

ضلع گھوٹکی میں شدید بارش ہوئی ، جبکہ شکار پور ، جیکب آباد اور سکھر میں دھول کے طوفان آئے ، جس نے سکھر الیکٹرک پاور کمپنی (ایس ای پی سی او) کے 74 فیڈروں کو توڑ دیا۔

جیکب آباد اور دادو میں دھول کے طوفان نے متعدد درخت اکھاڑ دیئے۔

دھول کے طوفان کے بعد بارشوں نے ہالہ اور ماتیاری میں شدید طوفان برپا کیا جبکہ حیدرآباد میں تیز ہواؤں کے ساتھ بوندا باندی ہوئی۔

 

 

مزید یہ کہ نواب شاہ میں دھول کے طوفان کے ساتھ بارش ہوئی جس سے ڈسٹرکٹ میں بجلی کی کمی واقع ہوئی۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *