کراچی ریس کورس میں مکمل لاک ڈاؤن کے بعد تقریبا پانچ لاکھ روپے کے نقصان کی لاگت آگئی۔

کراچی: کراچی ریسکورس (کے آر سی) میں مکمل خاموشی ہے اور یہ ایک ویران جگہ کا منظر پیش کرتا ہے ، گھوڑوں کے مارننگ ٹریک کا کام مستثنیٰ ہے ، کوویڈ 19 کے معاملات پر قابو پانے کے لئے سندھ حکومت کی جانب سے لاک ڈاؤن کے باعث روک دیا گیا ہے۔

 

 

Advertisement

اب تک پانچ ریسنگ ہفتوں میں کے آر سی کو تقریبا 5لاکھ روپے کے نقصان کی لاگت آ گئی ہے۔ مروجہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے عید ملن کپ بھی نہیں ہوسکا۔

 

 

واضح رہے کہ جم خانہ ریس کی آخری میٹنگ 2 مئی کو ہوئی تھی۔

اگرچہ عوام کو اس بیماری سے بچنے کے لئے ویکسین لگائی جا رہی ہے، لیکن کے آر سی بھی اس معاملے میں پیچھے نہیں رہا اور گھوڑوں کو سالانہ اوکین فلو اور دیگر بیماریوں سے بچاؤ کی ویکسین لگوا دی۔

 

 

چونکہ کوویڈ 19 میں اضافے کی وجہ سے 10 ہفتوں کی چھٹی کے بعد لاہور میں ریسوں کا آغاز ہوچکا ہے ، کچھ لوگ ٹریف اکاؤنٹنٹ سمیت آوینائن اسپورٹ سے وابستہ ہیں ، روزگار حاصل کرنے کے لئے اس شہر کا سفر کرتے ہیں۔

 

 

کے آر سی عہدیداروں نے تمام معاملات پر گہری نظر رکھی ہوئی ہے اور امید ہے کہ ریس جلد ہی دوبارہ شروع ہوجائیں گی۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *