وفاقی حکومت نے واجد ضیاء کو ایف آئی اے کے ڈائریکٹر جنرل کے عہدے سے ہٹا دیا۔

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے واجد ضیاء کو وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) کے ڈائریکٹر جنرل کے عہدے سے ہٹا دیا۔

 

اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کی جانب سے اس بارے میں نوٹیفکیشن جاری کیا گیا۔

Advertisement

 

ایک نوٹیفکیشن کے مطابق ، ثناء اللہ عباسی ، جو انسپکٹر جنرل پولیس (آئی جی پی) خیبر پختونخوا (کے پی) کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہے تھے ، کو نیا ایف آئی اے ڈی جی مقرر کیا گیا ہے۔
ضیاء کو ڈی جی نیشنل پولیس بیورو تعینات کیا گیا ہے جبکہ معظم انصاری اس وقت کمانڈنٹ فرنٹیئر کور (ایف سی) کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہے ہیں۔

 

وفاقی کابینہ نے گردشی سمری کے ذریعے نئی تقرریوں کو منظوری دے دی۔ عمران خان نے یہ فیصلہ عوام کے وسیع تر مفاد میں لیا ہے۔

 

حکومت نے پاناماگیٹ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سابق سربراہ واجد ضیا کو نومبر 2019 میں وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) کا ڈائریکٹر جنرل مقرر کیا تھا۔

 

یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ گذشتہ سال دسمبر میں وفاقی حکومت نے ثناء اللہ عباسی کو خیبر پختونخوا (کے پی) کے انسپکٹر جنرل پولیس (آئی جی پی) کے عہدے پر تعینات کیا تھا۔

 

ثناء اللہ عباسی نے کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ کی حیثیت سے بھی خدمات انجام دی ہیں۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *