سعودی حکومت نے حج زائرین کی تعداد محدود کر دی۔

سرکاری میڈیا کے مطابق ، سعودی عرب نے اعلان کیا کہ وہ مملکت میں مقیم 60،000 باشندوں کو سالانہ حج کرنے کی اجازت دے گا۔

 

سعودی عرب کی سرکاری پریس ایجنسی کے مطابق ، وزارت حج نے کہا کہ اس سال حج کی سہولت “شہریوں اور ریاست کے باشندوں کے لئے کھلی رہے گی ، جو 60،000 عازمین تک محدود ہے”۔

Advertisement

 

 

حج ادا کرنے کے خواہشمند افراد کو دائمی بیماریوں سے پاک ہونا چاہئے اور انہیں ویکسین لگانی چاہیے ”اور اس کی عمر 18 سے 65 سال کے درمیان ہے۔

 

سعودی حکومت نے پاکستان سے جانے والے عازمین حج کے لئے بھی کچھ ہدایات جاری کی تھیں۔ جن میں سے سب سے اہم یہ تھی کہ ان تمام حجاج کو امریکی کمپنی فائزر کی مہیا کردہ ویکسین لگائی جائے۔ جبکہ پاکستان میں کرونا ویکسین کی زیادہ تر مقدار چین سے منگوائی گئی ہے۔

 

 

وزیراعظم عمران خان نے بذات خود سعودی حکام سے اس معاملے پر نظر ثانی کرنے کی درخواست کی ہے۔ انہوں نے عالمی ادارہ صحت کی رپورٹ کا حوالہ دیا جس کے تحت چین کی دو کمپنیوں کو سرٹیفکیٹ جاری ہو گیا ہے۔ جس کے تحت یہ ویکسین بھی مستند اداروں کی دوائیوں میں شمار ہوتی ہے۔

 

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *